توہین انبیاء ؑ ،صحابہؓ کرنیوالے افراد ،گروہوں اور جماعتوں کیخلاف سخت سے سخت قانون سازی کی جائے۔ صوفی مسعوداحمدصدیقی

 عاشقان رسولﷺ کیلئے توہین رسالت ﷺ ناقابل برداشت ہے۔ پیر احسان الحق نقشبندی

مسلم دنیا کے حکمران مغرب کیساتھ بامقصد مذاکرات کوفرو غ دیں۔ پیر سید احمد ندیم نقشبندی

قدرتی آفات سے بچنے کیلئے حضور نبی کریم ﷺ کی بارگاہ اقدس میں درودوسلام کے نذرانے پیش کئے جائیں ۔ خلیفہ جی محمد ناصر علی نقشبندی

اقوام متحدہ نے توہین رسالت ﷺ پر قانون سازی نہ کی تو دنیا کوتیسری عالمی جنگ سے نہیں بچایا جاسکے گا۔ پیر نذیر حسین نقشبندی 

بین المذاہب ہم آہنگی سے مذاہب عالم کے درمیان نفرتوں کو کم کرنے کی کاوشوں کوشدید دھچکا لگاہے۔ محمد ریحان نقشبندی

حضور ﷺ سے عشق ومحبت سے ارضی وسماوی آفات وبلیات دورہوجاتی ہیں۔ پیر رانا محمد طاہر نقشبندی

فلم انسانیت پر اس صدی کاسب سے بڑا حملہ ہے۔ پیر مشتاق احمد نقشبندی

گستاخانہ فلم کھلم کھلا دہشت گردی ہے۔ پیر مختار احمد نقشبندی

فیصل آباد ( )توہین رسالت ﷺ ،انبیاء کرام ؑ ،امہات المومنینؓ اور صحابہ کرامؓ کے بارے میں گستاخانہ امریکی فلم کیخلاف امیر تنظیم مشائخ عظام پاکستان صوفی مسعوداحمدصدیقی کی زیر قیادت لاثانی سیکرٹیریٹ سے عظیم الشان پرامن ’’تحفظ ناموس رسالت ﷺ ریلی ‘‘نکالی گئی۔ریلی میں علماء مشائخ سمیت ہر طبقہ فکر سے لوگوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ریلی غلام رسول نگر سے فوارہ چوک،گیٹوں والا چوک،سلیمی چوک،جھال خانوآنہ،جی ٹی ایس چوک،ضلع کونسل ہال،پریس کلب سے ہوتی ہوئی چوک گھنٹہ گھر پہنچی ۔صوفی مسعوداحمدصدیقی نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ حکومت پاکستان تمام اسلامی ممالک سمیت پاکستان بھر سے مختلف مکاتب فکر کے جیدعلما ومشائخ کوبلاکر توہین رسالت ﷺ ،توہین انبیاء کرام ؑ ،توہین امہات المومنینؓ اورتوہین خلفائے راشدینؓکرنیوالے افراد ،گروہوں اور جماعتوں کیخلاف قانون سازی اورعمل درآمد کروانے کیساتھ ساتھ مغربی ممالک میں بھی اس کے نفاذ کویقینی بنانے میں موثر کردار اداکرے۔سیدالانبیاء ﷺ کی توہین کرنیوالے ملعون ،قاتل اور عالمی دہشت گرد ہیں ۔آج امت مسلمہ آقائے کل حضور نبی کریم روف الرحیم ﷺ کے اسوہ حسنہ سے دوری کی وجہ سے پوری دنیا میں رسوا ہورہی ہے۔اب بھی وقت ہے کہ اپنا تعلق اپنے آقا ﷺ سے مضبو ط کریں ۔دیگر مقررین میں پیر طریقت احسان الحق نقشبندی نے کہا کہ عاشقان رسولﷺ کیلئے توہین رسالت ﷺ ناقابل برداشت ہے اس کاسختی سے نوٹس لیا جانا چاہیے۔پیر لیاقت علی نقشبندی نے کہا کہ اقوام متحدہ مذاہب عالم بالخصوص اسلام اور بانی اسلام ﷺ کی توہین کیخلاف سخت سے سخت قوانین بنائے تاکہ آئندہ کسی ملعون کوایسی ناپاک جسارت کرنے کی جرات نہ ہو۔پیر محمد ناصر علی گل نقشبندی نے کہا کہ آقاﷺ کی سیرت وکردار کواپنا کرہی ہم اپنی زندگیوں میں حقیقی انقلاب برپا کرسکتے ہیں۔بیرون ممالک کیساتھ ساتھ اندرون ممالک سے بھی گستاخوں کاقلع قمع ہونا چاہیے۔پیر مختار احمد نقشبندی نے کہا کہ گستاخانہ فلم کھلم کھلا دہشت گردی ہے جس سے کروڑوں مسلمانوں کی دل آزاری ہوئی ہے ۔ایسے دہشت گردوں کیخلاف دہشت گردانہ قوانین کے تحت سزادی جانی چاہیے۔پیر مشتاق احمد نقشبندی نے کہا کہ شرانگیز فلم انسانیت پر اس صدی کاسب سے بڑا حملہ ہے۔پیر سید احمد ندیم نقشبندی نے کہا کہ مسلم دنیا کے حکمران مغرب کیساتھ بامقصد مذاکرات کوفرو غ دیں تاکہ آنیوالے نسلوں کوامن وسلامتی کاپیغام دیا جاسکے۔محمد ریحان نقشبندی نے کہا کہبین المذاہب ہم آہنگی کے ذریعے مذاہب عالم کے درمیان نفرتوں کو کم کرکے امن کوفروغ دیا جاسکتاہے۔پیر صوفی نذیر حسین نقشبندی نے کہا کہاقوام متحدہ نے توہین رسالت ﷺ پر قانون سازی نہ کی تو دنیا کوتیسری عالمی جنگ سے نہیں بچایا جاسکے گا۔پیر رانا محمد طاہر نقشبندی نے کہاکہ حضور ﷺ سے عشق ومحبت سے ارضی وسماوی آفات وبلیات دورہوجاتی ہیں کیونکہ یہی تو وہ ہستی ہیں جن کے تصدق او رتوسل سے نظام حیات چل رہاہے۔شرکاء ریلی نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھارکھے تھے جن پر ان ملعونوں کیخلاف فوری ایکشن لینے ،امت مسلمہ کے اتحاد ،اقوام متحدہ کوفوری قانون سازی کرنے بارے تحریریں درج تھیں۔ریلی میں بین المذاہب امن اتحاد پاکستان ،لاثانی ویلفےئر فاؤنڈیشن انٹرنیشنل،آل پاکستان صوم وصلوٰۃ کمیٹی اور ماہنامہ لاثانی انقلاب انٹرنیشنل کے مرکزی اراکین سمیت امیران حلقہ نے اپنے اپنے علاقوں سے قافلوں کی قیادت کرتے ہوئے بھرپور شرکت کی۔ریلی کے اختتام پر سیدالانبیا ﷺ کی بارگاہ اقدس میں گلہائے عقیدت اور درودوسلام کے نذرانے پیش کرنے کی سعادت حاصل کی گئی۔