حضرت محمد ﷺ کی بارگاہ میں محبوبیت

 *۔۔۔پیررفاقت علی (قائد آباد ، خوشاب ) 27رمضان المبارک 14/12/1992 ء عالمِ رویا میں ‘میں نے دیکھا کہ میں مدینہ شریف میں حاضر ہوں سامنے ہی مسجد نبوی ﷺ ہے ۔ مجھے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ میرے آقا لاثانی سرکار بھی مدینہ شریف میں جلوہ افروز ہیں ۔ میں بہت زیادہ خوش ہوتا ہوں کہ دربار رسالت ﷺ میں اپنے آقا کے ساتھ حاضر ی دوں گا یہی سوچتا ہوا روضۂ انور کی جانب بڑھتا ہوں دور وسے ہی مجھے نظر آتا ہے کہ صرف چند لوگ غالباً پانچ یا سات افراد روضۂ انور پر حاضر ہیں اور وہ حضور نبی کریم ﷺ کے قدم مبارک کی جانب بالکل جالیوں کے سامنے کھڑے ہیں میں سوچتا ہوں کہ میں کدھر جا کر کھڑا ہوں کیونکہ ایک طرف میرے مرشد پاک ہیں ۔جنہوں نے مجھے یہاں تک پہنچایا اور دوسری طرف دربار رسالت ہے ۔ اس وقت مجھے القاء ہوا کہ حضور نبی کریم ﷺ کی بارگاہ میں صلوٰۃ و سلام عرض کر کے اپنے پیرو مرشد کے پیچھے کھڑا ہوجاؤں چنانچہ میں نے ایسا ہی کیا ۔

کچھ دیر بعد جالیوں کا دروازہ کھلتا ہے اور میرے پیرو مرشد قبلہ صوفی مسعود احمد صدیقی لاثانی سرکار صاحب اندر تشریف لے جاتے ہیں ۔ میں بھی اپنے آقا کے پیچھے پیچھے اندر چلا جاتاہوں ۔ اندر جا کر جب میرے قبلہ حضور نبی کریم ﷺ چادر سر مبارک سے اٹھا کر سرکار کے ساتھ مصافحہ کر تے ہیں اور سلام کا جواب دیتے ہیں پھر سرکار نبی کری ﷺ میرے پیرو مرشد کو اپنے پاس بٹھا لیتے ہیں اتنا قریب کہ اپنے جسم مبارک کے ساتھ لگا لیتے ہیں پھرمیری طرف مسکرا کر دیکھتے ہیں اور فرماتے ہیں ’’مجھے ان سے (صوفی مسعود احمد صدیقی لاثانی سرکار ) اتنی شدید محبت ہے کہ میں ان کا یہاں بڑی بے چینی سے انتظار کرتا ہوں ‘‘۔ پھر میرے آقا کو اپنے گلے سے لگا لیتے ہیں ۔ 

*۔۔۔محمد یا مین صاحب ( خانیوال) بیان کرتے ہیں کہ ایک مرتبہ عالمِ رویا میں نبی کریم ﷺ کی زیارت کا شرف حاصل ہو اآپ نے ارشاد فرمایا ’’حاجی مسعود احمد صدیقی صاحب المعروف لاثانی سرکار محبوبِ کبریا ہیں ‘‘ ایک خواب میں ‘میں نے حضور لاثانی سرکار کی پیشانی پر لکھا دیکھا ’’خاص الخاص محبوب کبریا ، خاص الخاص محبوب مصطفےٰﷺ 

*۔۔۔عاطف صاحب (نثار کالونی ۔ فیصل آباد ) کہتے ہیں کہ نبی پاک ﷺ نے اس گنہگار کو بھی اپنی زیارت با برکت سے نوازا اور فرمایا کہ ’’جو لاثانی سرکار کے قریب ہے وہ ہمارے بھی قریب ہے ‘‘۔

*۔۔۔عامر حمید (شاہدرہ ٹاؤن ، لاہور ) نے ہمیں بتایا کہ انہیں خواب میں حضرت سیدنا امام الا نبیاء حضرت محمد ﷺ کی زیارت ہوئی اور آپ ﷺ نے ارشاد فرمایا ’’جو لاثانی سرکار سے محبت رکھتے ہیں وہ ہمیں اچھے لگتے ہیں۔ ‘‘

*۔۔۔ناصر صاحب ( بٹالہ کالونی ۔ فیصل آباد ) بیان کرتے ہیں کہ مجھ سیاہ کار کو بھی حضور احمد مجتبیٰ حضرت محمد مصطفےٰﷺ نے اپنی نظر عنایت سے نوازا۔ آپ ﷺ خواب میں لاثانی سرکار اور چادر والی سرکار ؒ کے ہمراہ تشریف لائے اور لاثانی سرکار کے کندھے پر ہاتھ رکھ کر چادر والی سرکار ؒ سے ارشاد فرمایا : ’’دیکھو جی! مسعود احمد کتنا نرم دل ہے ۔ اس کے کیا کہنے جی ! ‘‘

تو میرے آقا حضور میاں صاحب المعروف چادر والی سرکار ؒ نے نبی پاک ﷺ سے عرض کی :

’’سرکار ﷺ اسی لئے تو اپنا بنایا ہے جی ‘‘۔(سبحان اللہ ) 

*۔۔۔بشیر صاحب (خانیوال ) بیان کرتے ہیں کہ ایک دن کچھ لوگوں کی باتیں سن سن کر میرے دل میں لاثانی سرکار کے متعلق غلط فہمی پیدا ہو گئی اسی رات چادر والی سرکار رحمتہ اللہ علیہ نے تنبہیہ فرمائی ۔ اس کے بعد نبی کریم ﷺ کی زیارت ہوئی اور آپ ﷺ نے ارشاد فرمایا :

’’ہم نے تمہارے پیرو مرشد حاجی مسعود احمد صدیقی المعروف لاثانی سرکار کو جو مقام عطا کیا اس کی کسی چیز کو خبر نہیں اسی طرح ان کی شان اور کرم کا بھی کوئی اندازہ نہیں کر سکتا ۔ تم ان کا بہت ادب کیا کرو۔ 

*۔۔۔جناب طارق علی بھٹی صاحب ( گلبرگ کالونی فیصل آباد ) بیان کرتے ہیں کہ ایک مرتبہ پیرو مرشد کے کرم سے حضرت سیدنا صدیق اکبرؓ اور چادر والی سرکار ؒ اور قبلہ لاثانی سرکار کے ہمراہ تشریف لائے پھرآپ تینوں بزرگ ہستیوں نے میرے پیرو مرشد لاثانی سرکار کے گلے میں سرخ پھولوں کے ہار ڈالے ۔ 

*۔۔۔ہمارے پیر بھائی ندیم شہزاد ( محلہ اسلام نگر ، فیصل آباد ) بیان کرتے ہیں کہ نماز فجر ادا کرنے کے بعد سو گیا ، تھوڑی ہی دیر بعد آقا کل حضور نبی کریم ﷺ کی زیارت پاک ہوئی ۔ آپ ﷺ ایک تخت پر جلوہ افروز ہوتے ہیں ۔آپ کے ساتھ حضرت معین الدین چشتی اجمیری ؒ بھی تشریف فرما ہوتے ہیں اتنے میں ، میں نے دیکھا کہ میرے پیرو مرشد قبلہ حضور لاثانی سرکار بھی تشریف لے آتے ہیں ۔حضو رنبی کریم ﷺ نے میرے پیرو مرشد سے فرمایا کہ آپ بھی ہمارے ساتھ تخت پر بیٹھیں ۔

میں نے بارگاہِ رسالت مآب ﷺ میں عرض کی حضور ﷺ! میرے والد صاحب بیمار ہیں ۔ ان کے لئے دعا فرمائیں ۔ آپ ﷺ نے نظر کرم فرمائی اور فرمایا کہ ’’ہو جائیں گے ٹھیک ‘‘۔

اور آپ ﷺ نے ارشاد فرمایا :’’جب تمہارے والد ٹھیک ہو جائیں تو سیدھے اپنے پیرو مرشد کے پاس لے کر جانا اس کے بعد آپ ﷺ نے مجھے کچھ عطا فرمایا ۔ 

الحمدللہ !اس کے بعد میرے والد آپ ﷺ کے کرم سے بالکل صحت یاب ہو گئے ۔ 

*۔۔۔محمد اشر ف صاحب ( خانیوال ) بیان کرتے ہیں کہ حضور نبی کریمﷺ کی زیارت نصیب ہو ئی یہ میری خوش بختی ہے میں نے اللہ تعالیٰ کے حضور دعا کی تھی یا اللہ !ہماری نسبت جس ہستی کے ساتھ ہوئی ہے ہمیں ان کے بارے میں کچھ ارشاد فرما ۔تب رب العزت نے مجھے میرے آقا کی شان کی ا دنیٰ سی جھلک دکھائی جو میں آپ کو بھی سنا نا چاہتا ہے ہوں ۔ 

ایک رات خواب میں دیکھا کہ ایک بہت بڑی محفل ہے وہاں میرے آقا حضور نبی کریمﷺ اور حضور قبلہ لاثانی سرکار تشریف فرما ہیں نبی کریم ﷺ میرے پیرو مرشد لاثانی سرکار کو ایک جھنڈا عنایت فرماتے ہیں اور فرمایا کہ یہ سامنے پہاڑ کی چوٹی پر لگا دو ۔ میرے آقا حضور لاثانی سرکار وہ جھنڈا مجھے لگا نے کا حکم دیتے ہیں جب میں جھنڈا لگا کر واپس آیا تو نبی پاک ﷺ نے فرمایاکہ ’’ تم لاثانی سرکار کے بھی نعرے لگایا کرو‘‘۔

میں جب صبح سو کر اٹھا تو بہت خوش تھا کہ میرے اللہ نے میری عرض کیسے سنی اور میرے سرکار کی جناب رسالت مآب ﷺ سے نسبت کو کس بہترین انداز سے دکھایا ۔

*۔۔۔ مسز نذیر بٹ ( مقصود آباد ، فیصل آباد ) بیان کرتی ہیں کہ محفل ہو رہی ہے اتنے میں میرے آقا سید الثقلین مرادالعاشقین حضور نبی کریمﷺ تشریف لائے اور آپ نے فرمایا :’’ لاثانی سرکار اللہ کے بہت محبوب ہیں ۔ انہیں کوئی عام چلے و ظیفے کر کے بن جانے والے پیرو ں جیسا نہ سمجھنا ۔ یہ اللہ کے اور ہمارے محبوب ہیں یہ جہاں بھی ہوتے ہیں اور جہاں بھی جاتے ہیں ہر وقت ان پر ہماری نظر کرم ہوتی ہے ۔ ‘‘

*۔۔۔محمد عارف صاحب ایڈووکیٹ ہائی کورٹ ( غلام رسول نگر ، فیصل آباد )جو کہ قبلہ حضور لاثانی سرکار کے بڑے بھائی بھی ہیں ۔ فرماتے ہیں کہ جس دن قبلہ صوفی مسعود احمد صدیقی صاحب لاثانی سرکار صاحب حج کیلئے تشریف لے کر گئے ۔ اسی دن مجھے خواب آیا ۔ میں نے دیکھا کہ میں مدینہ منورہ پہنچ گیا ہوں سارا شہر سجایا جارہا ہے ۔ ایئر پورٹ سے لیکر مسجد نبوی ﷺ تک سارا راستہ جھنڈیوں سے آراستہ ہے ۔ میں بڑا حیران ہوتا ہوں کہ آج کیا ہو رہا ہے کہ پورا مدینہ منورہ سجایا جا رہا ہے ۔اتنے میں دیکھا کہ قبلہ لاثانی سرکار جہاز سے اتر کر تشریف لائے ۔بہت سے لوگوں نے آپ کا استقبال کیا ۔اس کے بعد آپ بڑی ہی خوبصورت کا ر میں بیٹھ کر تشریف لے گئے اور لوگ کہہ رہے ہیں وہ ہستی تشریف لے آئی ہے ۔ جن کے استقبال کیلئے مدینہ منورہ کو سجایا گیا ہے ۔ میں بہت خوش ہوتا ہوں کہ یہ سب تیاریاں تو میرے قبلہ لاثانی سرکار کی وجہ سے ہو رہی تھیں۔

*۔۔۔نذر حسین ( منصور آباد ، فیصل آباد ) بیان کرتے ہیں کہ اللہ رسول ﷺ نے مرشد پاک کے صدقے بڑا کرم فرمایا مجھے آستانہ عالیہ کی عظمت دکھائی گئی ۔ میں نے خواب میں دیکھا کہ قبلہ حضور لاثانی سرکار کے حجرہ مبارک کے اوپر روضۂ رسول ﷺ بنا ہوا ہے ۔ فرشتے سبز گنبدکو سجا رہے ہیں میں عرض کرتا ہوں کہ یہ آپ کس لئے کر رہے ہیں ۔ ارشاد ہوا کہ جشن عید میلاد النبی ﷺ کی محفل آ رہی اس لئے ہم یہ سجا رہے ہیں ( کچھ دنوں بعد عید میلاد النبی کی محفل تھی ) 

*۔۔۔غلام مصطفےٰ ( راجہ چوک، فیصل آباد ) بیان کرتے ہیں کہ میں نے خواب میں دیکھا کہ کچھ لوگ جمع ہیں اور کہتے ہیں کہ نبی کریم ﷺ تشریف لا رہے ہیں ۔ یہ سن کر میں بھی شوق دید میں ان لوگوں کے ساتھ چل پڑتا ہوں جب وہاں پہنچا تو کیا دیکھتا ہوں کہ میرے آقا لاثانی سرکار حضور نبی کریم ﷺ کے استقبال کیلئے پہلے ہی وہاں موجود ہیں نبی کریم ﷺ کی تشریف آوری پر میرے آقا نبی کریم ﷺ کی قدمبوسی کرتے ہیں ۔ 

حضور نبی کریم ﷺ میرے آقا کو اٹھا کر سینے سے لگا تے ہیں اور فرماتے ہیں :

’’تمہیں مبارک ہو کہ ہم نے تمہارے سلسلہ میں اولیاء کاملین پیدا کر دیئے ہیں ‘‘۔

*۔۔۔محمد سہیل اقبال (جھنگ روڈ ، فیصل آباد ) بیان کرتے ہیں کہ ایک دن میں نے روحانی طور اپنے پیرو مرشد سے عرض کی سرکار ! مجھے نبی کریم ﷺ کی زیارت کا بہت شوق ہے کرم کریں دوسری رات جب میں سو گیا تو کیا دیکھتا ہوں کہ میرے پیرو مرشد اور چند بھائی سامنے سے تشریف لا رہے ہیں جب میں آپ کے قریب پہنچا تو حضور قبلہ لاثانی سرکار صاحب نے میرے کان میں فرمایا ’’تمہیں حضور نبی کریم ﷺ کی زیارت کا بہت شوق ہے آؤ تمہیں حضور سرکار عالمین سید الانبیاء نبی کریم ﷺ کی زیارت کروا کر لاتے ہیں ۔ میں بہت خوش ہوا کہ میرے آقا نے کتنی جلدی میرے دل کی خواہش جان لی اور کرم فرمادیا ۔ اس کے بعد میرے قبلہ لاثانی سرکار اور پیر بھائی ذکر کرتے ہوئے چلنے لگے اور ایک مکان کے پاس ٹھہر گئے ہم نے دیکھا کہ مکان کی چھت پر نبی کریم ﷺ تشریف فرماہیں ۔ آپ ﷺ نے کرم فرمایا اور فرمایا کہ ’’ تم سب اوپر آ جاؤ ‘‘۔ میں بہت خوش ہوتا ہوں کہ میرے آقا کے ساتھ ہونے کی وجہ سے حضو ر نبی کریم ﷺ نے ہمیں بھی اپنے پاس بلایا ۔ چنانچہ ہم اوپر چلے گئے جب ہم اوپر پہنچے تو حضور نبی کریم ﷺ میرے آقا سے گلے ملے ۔ جب سرکار اپنے جوتے مبارک اتار کر ایک طرف تشریف فرما ہو گئے تو ہمارے ایک پیر بھائی نے انہیں چوما اور ایک طرف رکھ دیا آپ ﷺ یہ دیکھ کر بہت خوش ہوئے اور اس کے اس عمل کو بہت پسند فرمایا ۔ میں نے جب یہ دیکھا تو جوتے مبارک والی جگہ کی خاک کو اکٹھا کر کے چوما اور اپنے منہ پر لگایا آپ ﷺ یہ دیکھ کر اور بھی زیادہ خوش ہوئے اور فرمایا کہ مرید کو پیر سے ایسی ہی محبت کرنی چاہیئے ۔ اس کے بعد ہم نے حضور نبی کریم ﷺ کے پیچھے نماز ادا کی ۔

*۔۔۔عبد العزیز (پرانا خانیوال ) بیان کرتے ہیں کہ میں نے خواب میں دیکھا کہ ایک بہت بڑی جگہ ہے اور وہاں لا تعداد کرسیاں بچھی ہوئی ہیں اور سٹیج پر تین عدد مسندیں بچھی ہوئیں ہیں کرسیوں پر بزرگ تشریف فرما ہیں اتنے میں میرے آقا حضور نبی کریم ﷺ ، حضرت پیر سید ولی محمد شاہ صاحب المعروف چادر سرکار ؒ اور میرے پیرو مرشد صدیقی لاثانی سرکار تشریف لے آتے ہیں ۔ پھر نبی کریم ﷺ نے حاضرین محفل کو مخاطب کر کے ارشاد فرمایا ’’لاثانی سرکار سخی سلطان ہیں‘‘۔

اس کے ساتھ ہی آپ نے میرے قبلہ کی شان میں نعرہ لگوایا ۔ سب نے نعرہ کا جواب دیا ۔ 

*۔۔۔محمد یا مین صاحب ( خانیوال ) بیان کرتے ہیں کہ ابھی مجھے بیعت ہوئے کچھ ہی عرصہ ہوا تھا کہ نبی کریم ﷺ نے اس گنہگار کو اپنی زیارت بابرکت سے نواز ا اور فرمایا ۔

’’تمہارے پیرو مرشد لاثانی سرکار فرشتوں میں بھی مقبول ہیں‘‘ یہ مجھے اپنے پیرو مرشد کی شان بتائی پھر اس کے بعد آپ کی بے حد کرم نوازیاں ہوئیں اور میرے آقا تیزی سے روحانی مدارج طے کراتے گئے اور ایک رات حضور نبی کریم ﷺ کی زیارت ہوئی اور آپ ﷺحالت جلالت میں مجھ سے فرماتے ہیں ۔ 

’’ہم تجھے طریقت نہ سکھائیں تو سمجھتا ہی نہیں ‘‘۔

میں خاموش کھڑا کانپتا رہا پھر آپ نے فرمایا :

’’اب تم جب بھی اپنے پیرو مرشد کے آستانہ عالیہ پر حاضری دو تو تمہارے پیروں میں جوتی نہ ہو ۔ ننگے پیر حاضری دیا کرو لاثانی سرکار کا آستانہ عالیہ ہما را ہی آستانہ ہے ‘‘۔

اس کے بعد میرے آقا حضور نبی کریم ﷺ وقتاً فوقتاً اپنی زیارت با برکت سے نوازتے رہتے ۔ ایک مرتبہ تاجدار عرب و عجم حضور نبی کریم ﷺ تشریف لائے اور آپ نے فرمایا ’’لاثانی سرکار ہمارے محبوب نظر ہیں اور تم پر جو اتنا کرم ہو رہا ہے یہ صرف تمہارے پیر و مرشد کی وجہ سے ہے اور ہم بھی اسی وجہ سے نواز رہے ہیں ۔ اس کے بعد آپ ﷺ کھڑے ہو جاتے ہیں اور اپنا دایاں ہاتھ مبارک بلند کر کے فرماتے ہیں ۔’’ہم نے لاثانی سرکار کی شان بلند کی ہے ۔‘‘

ایک مرتبہ حضور نبی کریم ﷺ کی زیارت نصیب ہوئی ۔ آپ ﷺ پہاڑوں پر تشریف فرما ہیں اور کچھ درویش بھی آپ کی خدمت میں حاضر ہوتے ہیں ۔ آپ ﷺ ہمیں نصیحت فرماتے ہیں ۔’’فقیر اکمل کی صحبت میں بیٹھو ۔‘‘ پھر آپ ﷺ نے فرمایا ’’فقیر اکمل کی زیارت کر لو‘‘۔ اس کے ساتھ ہی لاثانی سرکار تشریف لے آتے ہیں۔ آپ ﷺ ان کی طرف اشارہ کر کے فرماتے ہیں ان کی زیارت کرلو ۔

*۔۔۔غزالہ ہما( رضا آباد ، فیصل آباد) 15-05-1997ء رات بعد نماز عشاء جب پیر و مرشد کے ارشاد فرمائے ہوئے طریقے سے مراقبہ کیا تو پیر و مرشد کے وسیلہ پاک سے کیا دیکھتی ہوں کہ سٹیج پر حضو پر نور حضرت محمد مصطفی ﷺ صحابہ کرامؓ ، خلفائے راشدینؓ اور اولیاء کرام تشریف فرما ہیں ۔ رنگ و نور کی بارش ہو رہی ہے ۔ میں نے دیکھا کہ تمام بزرگان دین حضور ﷺ کو مبارک باد پیش کر رہے ہیں اور عرض کر تے ہیں حضور ﷺ آپ کو مبارک ہو کہ اللہ رب العزت نے اپنے بندہ خاص اور آپ کے محبوب امتی پر خاص کرم فرمایا ۔‘‘تو ان کی یہ بات سن کر میرے والیل زلفوں والے مدنی آقا ﷺ نے فرمایا ۔’’ ہم نے لاثانی سرکا کو لاثانی نام دیا ہے۔ کیونکہ ان کا کوئی ثانی نہیں ۔‘‘سبحان اللہ 

*۔۔۔سروری بی بی زوجہ محمد صادق ( تحصیل ڈسکہ ‘ ضلع سیالکوٹ) بیان کرتی ہیں کہ میں نے خواب میں دیکھا کہ ایک کھلا میدان ہے اور وہاں تخت پر حضور نبی کریم ﷺ تشریف فرما ہیں ۔ آپ ﷺ کے قریب ہی صحابہ کرامؓ پنجتن پاک ؑ ،حضرت پیر جماعت علی شاہ صاحب ؒ اور سیدنا چادر والی سرکار ؒ بھی موجود ہیں ۔حضور نبی کریم ﷺ نے ارشاد فرمایا ۔’’ لاثانی سرکار کا در ہمارا ہی در ہے ۔ اسے کبھی نہ چھوڑنا ۔ لاثانی سرکار ہمارا بیٹا ہے ‘‘۔ یہ فرماتے ہوئے آپ پر جوش ہو گئے اور پھر اسی کیفیت میں میرے قبلہ لاثانی سرکار کے نعرے لگوائے ۔ 

*۔۔۔خورشید عالم صاحب (غازی آباد ، فیصل آباد ) بیان کرتے ہیں کہ خواب میں دیکھا کہ محفل ہو رہی ہے ۔ میرے قبلہ حضور لاثانی سرکار محفل میں تشریف فرما ہیں۔ اتنے میں دیکھا کہ حضور نبی کریم ﷺ تشریف لائے ۔ میرے آقا قبلہ لاثانی سرکار جلدی سے اٹھ کر نبی کریم ﷺ کی قدم بوسی کرتے ہیں ۔آپ ﷺ بہت خوش ہوتے ہیں اور بہت محبت سے میرے آقا لاثانی سرکار کے سر اقدس پر اپنا دست شفقت رکھتے ہیں اور فرماتے ہیں ۔ ’’بابو جی اللہ تعالیٰ نے آپ کو بہت نوازا ہے اور آپ اللہ رب العزت کے محبوب ہیں۔‘‘ سبحان اللہ 

*۔۔۔چوہدری محمد شفیع ولد محمد حسین (فیصل آباد) بیان کرتے ہیں کہ خواب میں دیکھا کہ حضور نبی کریم ﷺ جلوہ افروز ہیں اور ساتھ حضرت سیدنا صدیق اکبرؓ اور قبلہ لاثانی سرکار تشریف فرما ہیں ۔ میں نے دیکھا میرے قبلہ صدیقی لاثانی سرکار نے ہاتھ میں رجسٹر پکڑا ہوا ہے ۔ حضور نبی کریم ﷺ نے ارشاد فرمایا ۔’’لاثانی سرکار کا فیصلہ ہمارا ہی فیصلہ ہے ہمیں ان کا ہر فیصلہ منظور ہے اور جس کی یہ منظوری کر دیں ہمیں بھی منظور ہوتا ہے اور جس کو یہ نا منظور کر دیں وہ ہمیں بھی قبو ل نہیں ۔‘‘

بے شک میرے آقاﷺ نے حق فرمایا ۔جو بھی آپ کا امتی آپﷺ کی پیروی کرتا ہے تو آپ ﷺ اسے پسند فرمانے لگتے ہیں اور جب کوئی پیروی کے ساتھ آپ ﷺ کی ذات میں فنا ہو جاتا ہے ۔تو آپ ﷺ اسے اپنا محبوب بنا لیتے ہیں اور اس کے ہر عمل کو اپنا عمل قرا دیتے ہیں ۔ 

*۔۔۔محمد عمران صاحب ( چھوٹا مانوالہ اسی مربع میل ،فیصل آباد بیان کرتے ہیں کہ میں گھر میں بیٹھا اللہ کا ذکر کر رہا تھا کہ مجھ پر یکدم نیند کا غلبہ ہو ا اور میں جا کر لیٹ گیا ۔خواب میں دیکھا کہ میرے پیرو مرشد قبلہ لاثانی سرکار میرے غریب خانہ پر تشریف لائے آپ نے میرا ہاتھ پکڑ ا اور پروا ز کرتے ہوئے مدینہ منورہ تشریف لے گئے مسجد نبوی میں دیکھا کہ خلفائے راشدینؓ تشریف فرما ہیں اور بہت سے اولیائے کرامؓ بھی تشریف فرما ہیں ۔ اتنے میں حضور پر نور سرکار کل عالم ﷺ تشریف لاتے ہیں ۔ میں آپ ﷺ کی قدم بوسی کرنے لگتا ہوں تو آپ ﷺ مجھے پیچھے ہٹا دیتے ہیں کہ تم بہت گنا ہگا ر ہو ۔

میں یہ سن کر رونے لگتا ہوں میرے لجپال قبلہ لاثانی سرکار میری یہ حالت دیکھ کر حضور نبی کریم ﷺ سے میرے لئے عرض کرتے ہیں سرکار یہ جیسا بھی ہے اب میرا مرید ہے ۔ آپ ﷺ رؤف ور حیم ہیں آپ ﷺ اس پر کرم فرما کر اسے معاف فرما دیں ۔ شہنشاہ در گزر حضور نبی کریم ﷺ میرے پیرو مرشد قبلہ لاثانی سرکار کی عرض سن کر مسکرا ئے اور آپ ﷺ نے مجھ گنہگار پر کرم فرمایا اور ارشاد فرمایا ’’ لو جی چوم لو قدم ‘‘۔

بخشش کا پروانہ ملتے ہی میں دیوانہ وار قدم مبارک میں گر گیا اور جی بھر کر اپنے آقا ﷺ کی قدم بوسی کی ۔ آپ ﷺ میرے آقا لاثانی سرکار کی جانب سے اس انداز سے دیکھنے لگے گویا فرما رہے ہیں کہ تمہاری فریاد تو ہم ضروری پوری کرتے ہیں یہ سب میرے آقا کی نسبتوں کا کمال ہے ۔ کہ مجھ جیسے گناہگار کو نہ صرف بارگاہ رسالت ﷺ سے معافی دلوائی بلکہ حضور نبی کریم ﷺ نے کرم فرماتے ہوئے اپنی قدم بوسی کا شرف بھی عطا فرمایا ۔