پھیپھڑوں کے کینسرکاشکار ہندولڑکی شفایاب

 سید معین الدین نقشبندی (حیدرآباد، انڈیا) بتاتے ہیں کہ میں اور انجینئر محمد عمران نقشبندی صاحب نمز(NIMS)ہسپتال حیدرآباد انڈیا میں اپنے ایک پیر بھائی کی عیادت کیلئے گئے وہ کافی بیمار تھے، محمد عمران نقشبندی نے انہیں دم کیا اورایک ہی دم سے انہیں فوری طو رپر آرام آگیا، اللّٰہ تعالیٰ نے مرشد کریم صدیقی لاثانی سرکارکے صدقے میں انہیں مکمل شفاعطا ہوئی اوراگلے ہی دن اسے ہسپتال سے چھٹی بھی مل گئی۔ وہیں ہسپتال میں ایک غیر مسلم لڑکی تکلیف سے چیخ وپکار کررہی تھی ،ہم نے پوچھا تو پتہ چلاکہ اسے پھیپھڑوں کا کینسر ہے اور انتہائی غریب گھرانے سے اس کاتعلق ہے، محمد عمران نقشبندی نے اسے بھی دم کیا اوردم کرتے ہی اس لڑکی کوآرام آگیا، اس کی تمام رپورٹس کلیئر ہوگئیں اوروہ شفایاب ہوکر دعائیں دیتی ہسپتال سے اپنے گھر گئی۔