ڈاکٹرز نے لاعلاج قرار دیا، بلڈ کینسر کامریض شفایاب

 سید ہدایت حسین نقشبندی(اکاؤنٹینٹ، کریم نگر، انڈیا)بتاتے ہیں کہ میں بلڈ کینسر جیسے موذی مرض میں مبتلاتھا،کافی عرصے سے ہسپتال میں زیر علاج تھا، زندگی اور موت کی کشمکش میں تھا، ڈاکٹرز نے لاعلاج قراردے دیا تھا،ہسپتال ہی میں مجھے صدیقی لاثانی سرکارصاحب کے فیوض وبرکات کے بارے میں بتایاگیا تودل انتہائی عقیدت ومحبت سے بھرگیااورنئی زندگی کیلئے امید کی کرن نظر آئی، ہسپتال میں سلسلہ عالیہ لاثانیہ کی شان وعظمت سنتے ہی بیعت کی سعادت حاصل ہوگئی۔انجینئر محمد عمران نقشبندی صاحب نے مجھے دم کیا اورمیرے لئے دعاکی تواللّٰہ تعالیٰ نے مرشدکریم صدیقی لاثانی سرکارکے صدقے میں چند ہی دنوں میں اس موذی مرض سے مکمل شفا عطافرمائی، میری تمام رپورٹس نارمل آئیں، اللّٰہ تعالیٰ کالاکھ شکرہے کہ اس نے ہمیں اپنے محبوب فقیر کی نسبت سے نوازااورشفا بھی عطا فرمائی۔